Punjab’s Chief Minister has demanded a traffic management strategy

Punjab’s Chief Minister has demanded a traffic management strategy: According to a news source, Punjab CM Punjab wanted a plan for traffic management in Lahore and other important towns, as well as a beautification program for the capital, to be created within a week.

While chairing a meeting on traffic management in Lahore, the CM stated that a comprehensive plan of action was required to address the problem. It was because residents have been experiencing traffic congestion issues. He also instructed the commissioner of Lahore to prepare proposals for addressing municipal affairs and traffic flow, as there had been little to no urban planning done in the city recently. According to him, a well-organized transportation infrastructure is a visible symbol of civilized civilization.
The appropriate departments are necessary to rescue citizens from traffic problems, as they will be confronted with an increased number of traffic obstacles as the population grows. Punjab’s Chief Minister has demanded a traffic management strategy: The CM stated that a verified tree data of the city was also required when providing orders for the Lahore beautification plan.

وزیراعلیٰ پنجاب نے ٹریفک مینجمنٹ کی حکمت عملی کا مطالبہ کیا ہے: ایک خبر کے مطابق وزیر اعلیٰ پنجاب لاہور اور دیگر اہم شہروں میں ٹریفک مینجمنٹ کے ساتھ ساتھ دارالحکومت کے لیے بیوٹیفکیشن پروگرام ایک ہفتے میں تشکیل دینا چاہتے تھے۔

لاہور میں ٹریفک مینجمنٹ سے متعلق اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہا کہ اس مسئلے سے نمٹنے کے لیے جامع منصوبہ بندی کی ضرورت ہے۔ اس کی وجہ یہ تھی کہ شہریوں کو ٹریفک جام کے مسائل کا سامنا ہے۔ انہوں نے کمشنر لاہور کو بلدیاتی امور اور ٹریفک کی روانی سے نمٹنے کے لیے تجاویز تیار کرنے کی بھی ہدایت کی کیونکہ حال ہی میں شہر میں بہت کم یا کوئی شہری منصوبہ بندی نہیں کی گئی تھی۔ ان کے بقول، نقل و حمل کا ایک منظم
ڈھانچہ مہذب تہذیب کی نمایاں علامت ہے۔

شہریوں کو ٹریفک کے مسائل سے نجات دلانے کے لیے مناسب محکمے ضروری ہیں، کیونکہ آبادی بڑھنے کے ساتھ ساتھ انہیں ٹریفک کی بڑھتی ہوئی رکاوٹوں کا سامنا کرنا پڑے گا۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ لاہور کو بیوٹیفکیشن پلان کے آرڈر دیتے وقت شہر کے درختوں کا تصدیق شدہ ڈیٹا بھی درکار تھا۔

Read More: Kohat Realtors has appealed for the land transfer ban to be eased
Water level in Keenjhar Lake is on critical level

Leave a Comment

Your email address will not be published.